83

آدھے سر کا درد یا مائیگرین.

ہر قسم کا درد تکلیف دہ ہوتا ہے لیکن سر درد ایسا عارضه ہے جو اس بیماری میں مبتلا شخص کو دن میں بھی تارے دکھا دیتا ہے۔

جو لوگ نیند پوری نہیں کر پاتے یا حد سے زیادہ سوۓ رہتے ہیں وہ اکژ آدھے سر کے درد کا شکار ہو جاتے ہیں اس لیے ضروری ہے کہ اپنا معمول بناٸیں اور نیند کو پوری کرنے کی کوشش کریں

آدھے سر کے درد کی وجوہات

ماحولیاتی آلودگی
شور شرابہ
خوف و وہم
عجیب طرح کے وسوسے
حسد
نفرت
تکبر
معاشی مسائل
بخل
سماجی الجھنیں
ازدواجی نا خوشگوار ماحول
ذہنی خلفشار اور معاشرتی انتشار
عجیب خیالات کا آنا
وسواس
ڈپریشن
سٹریس
اینگزائٹی

آدھے سر کے درد کا علاج

ایک چٹکی سونف، ایک چٹکی سفید زیرہ، ایک گرام ادرک، ایک گرام پودینہ اور ایک عدد سبز الائچی ڈیڑھ کپ پانی میں اچھی طرح پکا کر قہوہ بنا کر پینے سے سر کا درد کم ہو سکتا ہے۔
خشک میوه جات، خمیر جات، مربہ جات، کشمش، گاجر کا جوس اور وٹامن اے سے بھرپور غذائوں کا بکثرت استعال کریں۔
موسمی سبزیاں کچی اور پکا کر با کثرت استعمال کریں۔
پھل اور پھلوں کے جوسز حسب گنجایش لازمی روزمرہ خوراک کا حصہ بنائیں۔
نیند ہمیشہ پوری لیں اور بلا وجہ بے سکونی سے بچنے کی کوشش کریں۔
تعمیری سوچ اور مثبت اپروچ بھی اس طرح کے عوارض سے ہمیں محفوظ رکھتی ہے۔
اگر ایک کپ کافی پی لیا جائے تو یہ سب سے سستا علاج ہے۔ کافی خون کے شریانوں کودباتی ہے جس سے درد کی شدت میں کمی واقع ہوتی ہے۔
کافی کے استعمال سے کھچائو کا چکار کندھوں، گردن، کمر،سر اور چہرے کے پھٹوں کو سکون ملتا ہے۔
رمضان کے پہلے روزے کے دوران بھوکے رہنے کی عادت نہ ہونے کی وجہ سے بھی مائیگرین کا حملہ ہو سکتا ہے۔
ایک دن میں کم از کم 2 لیٹر پانی پئیں۔
گرم گرم شیرے میں ڈوبی ہوئی جلیبیاں کھائی جائیں تو یہ بھی اکثر فائدہ مند ثابت ہوتی ہے۔
ناشتا اور کھانا کھائے بغیر اپنی روزمرہ سر گرمیوں کا آغاز نہ کریں اور صرف چائے یا کافی پر بھی ااکتفا نہ کریں۔
ایسی غذائوں سے پرہیز کریں جن میں امائنوایسڈ موجود ہو اور یہ ذیادہ تر گوشت، پنیر، مونگ پھلی اور چاکلیٹ میں پایا جاتا ہے۔
فیور فیو ایک پھول ہے جس میں ایسے عناصر پائے جاتے ہیں جو درد شقیقہ کے اثرات اور دورانیے کو کم کرنے میں مدد دیتے ہیں، اس کی پتیاں خشک کر کے پائوڈر بنا لیں یا قہوہ بنا کر پینے سے آرام ملتا ہے۔
روغن السی میں ضروری فیٹی ایسڈ کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ دن میں ایک دو چمچ اس قسم کے درد کے لیے مفید رہتے ہیں۔
آدھے سر کے درد کی ابتا ہی میں اگر ایک سے دو گرام ادرک کا سفوف لے لیا جائے یا جائے یا چھوٹا ٹکڑا چبا لیا جائے تو درد میں شدت نہیں آتی۔
جسم میں پانی کی کمی نہ ہونے دیں کیوں کہ آدھے سر میں درد کا ایک اہم سبب یہ بھی ہو سکتا ہے ۔ جنہیں یہ مسلہ ہو وہ اگر زیادہ دیر تک کھانا نہ کھائیں تو بھی انہیں سر درد ہو سکتا ہے۔

کیٹاگری میں : Health

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں